جرمنی: دنیا کا سب سے چھوٹا سٹیم انجن

Posted on December 15, 2011. Filed under: Global |

آخری وقت اشاعت:  منگل 13 دسمبر 2011 ,‭ 13:52 GMT 18:52 PST

جرمنی میں سائنسدانوں نے دنیا کا سب سے چھوٹا سٹیم (بھاپ) سے چلنے والا انجن بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔

خوردبینی جسامت کا یہ ماڈل رابرٹ سٹرلنگ کے ایک سو پچانوے سال پرانے ڈیزائن کے طرز پر بنایا گیا ہے۔

اس ماڈل میں پسٹنز کی جگہ لیزر کا استعمال کیا گیا ہے۔

سائنسدانوں نے یہ تحقیق یونیورسٹی آف سٹٹگارڈ کے میکس پلینک انسٹیٹیوٹ فار انٹلیجنٹ سسٹمز میں کی اور نیچر فزکس نامی جریدے میں شائع ہوئی ہے۔

سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ وہ اس بات پر حیران ہیں کہ یہ انجن کس قدر مؤثر طریقے سے حرارت کو قابلِ استعمال طاقت میں تبدیل کرتا ہے۔ لیکن ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس انجن کا چلنا ہموار نہیں ہے اور اس وقت اس انجن کا کوئی کارآمد استعمال نہیں ہے۔

روایتی سٹرلینگ انجن میں ایک گیس کا سلنڈر استعمال ہوتا ہے جس کے ایک حصے کو گرم اور دوسرے حصے کو ٹھنڈا کیا جاتا ہے۔گیس کے گرم ہو کر پھیلنے اور ٹھنڈی ہو کر سکڑنے کی مدد سے سلنڈر سے منسلک دو پسٹنز کو چلایا جاتا ہے۔

پروفیسر کلیمنز نے بی بی سی کو بتایا ’ہم یہ سمجھنا چاہتے تھے کہ یہ بنیادی طور پر کیسے کام کرتا ہے اور کیا یہ خوردبینی حد تک چھوٹے آلات میں کام کرتا بھی ہے یا نہیں ۔آج کل ہر کوئی الیکڑانک اور مکینیکل آلات کو چھوٹے سے چھوٹا کر رہا ہے تو ہم نے سوچا کیوں نہ اس اصول کی خوردبینی سطح پر تحقیقات کی جائیں۔‘

Advertisements

Make a Comment

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

  • Enter your email address to subscribe to this blog and receive notifications of new posts by email.

    Join 2 other followers

  • EnergyPakistan had

    • 765 hits

Liked it here?
Why not try sites on the blogroll...

%d bloggers like this: